مرکزی صفحہ / علمی حال / بیلہ، زلزلہ متاثرہ گرلز سکول کی طالبات کا مظاہرہ، متبادل عمارت کا مطالبہ منظور

بیلہ، زلزلہ متاثرہ گرلز سکول کی طالبات کا مظاہرہ، متبادل عمارت کا مطالبہ منظور

خلیل رونجھو

بیلہ، طالبات کا اسکول کی متبادل عمارت کے لیے اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر کے سامنے دھرنا، اسکول کو کسی اور جگہ شفٹ کیا جائے اور نئی عمارت کی فوری منظوری دی جائے، طالبات کا مطالبہ.

تفصیلات کے مطابق تاریخی شہر بیلہ میں گزشتہ دنوں زلزلے کے جھٹکوں سے شہر کا واحد لڑکیوں کا ہائی اسکول شدید متاثر ہوا، جس میں زلزلے کے دوران خوف و ہراس کے باعث طالبات بے ہوش ہوئیں اور اساتذہ کی حالت غیر ہوگئی تھی، جب کہ بھگڈار کے دوران بہت ساری طالبات زخمی بھی ہوئیں جس کے بعد محکمہ تعلیم کی طرف سے اسکول کا دورہ کیا گیا، عمارت کا جائزہ لینے کے بعد اسکول میں تین دن کی چھٹیوں کا اعلان کیا گیا.

آج حب دوبارہ اسکول کھولا گیا تو اسکول کی طالبات اور اساتذہ نے ان خستہ حال کمروں میں تدریسی عمل میں شرکت سے انکار کر دیا اور بطور احتجاج اسسٹنٹ کمشنر بیلہ کے دفتر کے سامنے دھرنا دے دیا.

دو گھنٹے کے دھرنے میں اسسٹنٹ کمشنر کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد طالبات نے اپنا دھرنا ختم کیا. اسسٹنٹ کمشنر نے طالبات کو اسکول کو گرلز کالج کی عمارت میں منتقل کرنے کی یقین دہانی کروائی اور اسکول کی نئی عمارت کے لیے حکام بالا سے رجوع کرنے کی یقین دہانی کروائی.

اس موقع پر سماجی کارکنان اور والدین کی بھی کافی تعداد موجود تھی.

Facebook Comments
(Visited 14 times, 1 visits today)

متعلق خلیل احمد رونجھا

خلیل احمد رونجھا
خلیل احمد رونجھو بیلہ سے تعلق رکھتے ہیں۔ کل وقتی سماجی کارکن ہیں۔ سماجی معاملات پر ہی لکھنا بھی ان کا مشغلہ ہے۔