مرکزی صفحہ / سیاسی حال / پیپلزپارٹی کا حب کرکٹ اسٹیڈیم میں‌ جلسہ کے اعلان سے کرکٹ کے حلقوں‌میں‌ تشویش کی لہر دوڑ گئی

پیپلزپارٹی کا حب کرکٹ اسٹیڈیم میں‌ جلسہ کے اعلان سے کرکٹ کے حلقوں‌میں‌ تشویش کی لہر دوڑ گئی

نیوز ڈیسک

حب: پیپلزپارٹی کا حب کرکٹ اسٹیڈیم میں‌ جلسہ کے اعلان سے کرکٹ کے حلقوں‌میں‌ تشویش کی لہر دوڑ گئی.

پیپلزپارٹی لسبیلہ نے 19 جنوری 2018 کو بلاول بھٹو زرادی کی حب آمد کے موقع پر جام غلام قادر اسٹیڈیم میں‌ جلسہ عام منعقد کرانے کا اعلان کیا ہے. جس کے لیے پیپلزپارٹی لسبیلہ نے ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کو خط ارسال کیا ہے. جس میں‌ کہا گیا ہے کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے چیرمین بلاول بھٹو زرداری نے 19 جنوری 2018 بروز جمعہ حب ضلع لسبیلہ میں‌ جلسہ کی تاریخ‌دی ہے. پارٹی جام میر غلام قادر اسٹیڈیم حب میں جلسہ منعقد کر رہی ہے.

دوسری جانب ریجنل و ضلعی کرکٹ ایسوسی ایشن حب میں سیاسی جلسوں کے لیے جام میر غلام.قادر کرکٹ اسٹیڈیم حب کا انتخاب سمجھ سے بالاتر ہے.

گزشتہ دنوں لسبیلہ کے مقامی سوشل.میڈیا میں پاکستان پیپلز پارٹی کے ضلعی و صوبائی زمہ داران کی جانب سے ڈپٹی کمشنر لسبیلہ کو تحریری عرضی دی گئی جس میں انھوں نے جام.میر غلام.قادر اسٹیڈیم حب کو جلسہ گاہ کے طور پر استعمال کرنے کی صرف اطلاع دی ہے جب کہ اس حوالے سے ڈسٹرکٹ ایسوسی ایشن کی اجازت و اطلاع بھی نہیں دی گئ.جب کہ پی سی بی کے اس گراوؑنڈ میں کوئٹہ ریجن کے میچز بھی ہو رہے ہیں.

ہم ان تمام زمہ داران کے نوٹس میں یہ بات واضع کردیں کہ اس گراوؑ نڈ کو دو سال تک کسی بھی حکومتی تعاون کے بغیر گراوؑنڈ میں سہولیات نہ ہونے کے باعث کرکٹ سرگرمیوں کے لیے بند رکھا گیا اور دو سال بعد سابق ضلعی صدر ظفراللہ جدگال اور موجودہ صدر پرویز احمد دودا کی زاتی کاوشوں سے اس میں گھاس اور پچز کا کام دوبارہ کرادیا گیا.اور کمو بیش 35 لاکھ روپے کی لاگت سے یہ مکمل ہوا ہے. اس طرح کے جلسوں سے نہ صرف گراس کع نقصان ہو سکتا ہے بلکہ وکٹیں اور پچز کو بھی زبردست نقصان ہوگا.جس سے ایک.مرتبہ پھر کرکٹ کی سرگرمیاں ماند پڑ جائیں گی. اس کے علاوہ اس گراوؑنڈ میں داخلے کے لیے ایک.ہی گیٹ ہے اور خدانخواستہ ہنگامی صورتحال میں بہت جانی نقصانات کا خدشہ ہے. میں آر سی ڈی روڈ پر واقع ہونے کی وجہ سے تمام تر ٹریفک کی معطلی دن بھر رہے گی اور دیگر سیکیوریٹی مسائل الگ سے ہوں گے.

دوسری جانب ریجنل کرکٹ‌ ایسوسی ایشن کے صدر ظفر جدگال نے حال حوال کو بتایا کہ گراؤنڈ سیاسی سرگرمیوں‌ سے مبرا ہوتے ہیں. اس طرح کے اقدامات سے لسبیلہ میں‌ کرکٹ کا کھیل متاثر ہوگا. انہوں‌ نے کہا کہ اگر ایک پارٹی گراؤنڈ میں‌جلسہ کرانے میں‌ کامیاب ہوئی تو اسٹیڈیم آئندہ کرکٹ کے بجائے جلسہ گاہ کا شکل اختیار کرے گی.

انہوں‌ نے کہا کہ ان کی کوشش ہے کہ پارٹیوں‌ کو اسٹیڈیم میں‌ جلسہ کرانے کی اجازت نہ دیں. اگر پھر بھی انتظامیہ اپنے اختیارات استعمال کرکے سیاسی جلسے کی اجازت دیں‌ گی تو وہاں‌ مجبورا خاموشی کے سوا کچھ نہیں‌ کر سکتے.

Facebook Comments
(Visited 9 times, 1 visits today)

متعلق حال حوال

حال حوال
"حال حوال" بلوچستان سے متعلق خبروں، تبصروں اور تجزیوں پہ مبنی اولین آن لائن اردو جریدہ ہے۔