مرکزی صفحہ / علمی حال / انٹر کالج بلیدہ مسائل کاشکار

انٹر کالج بلیدہ مسائل کاشکار

یلان زامرانی

انٹر کالج بلیدہ جوکہ شہید ایوب بلیدی انٹرکالج کے نام سے جاناجاتاہے تحصیل بلیدہ کا واحد انٹرکالج ہے جہاں بلیدہ زامران کے طلباء کی کثیـر تعداد زیر تعلیـم ہے . یہ کالج تقریباً سات سال کی بندش کے بعد پروفیسر ظہیر احمد کی جدوجہد سے اس کالج کے بند زنگ آلود دروازے تشنگان علم کیلئے کھل گئے اور طلبـاء کیلئے مایوسی کے دروازے امید کی روشنی میں بدل گئے.
لیکن تاحال یہ کالج مختلف مسائل کاشکارہے۔
پانچ مضامین
اسلامیـات
اردو
انگلش
فزکس
ایک اور مضمون
کے لیکچرر موجو نہیں ہیں۔. تاہم ڈائریکٹرتعلیم بلوچستان کے کہنے پر وہاں تعینات دیگر مضامین کے لیکچرر نے عارضی بنیاد پر اس کمی کو پورا کرنے کی کوشش کی ہے۔ لیکن انہیں تاحال تنخواہیں نہیں ملی ہیں جس پر وہ کلاسز بائیکاٹ کرنے پر غور کررہے ہیں.

حکومت بلوچستان میں شامل جماعت نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات جان محمدبلیدی کاتعلق بھی اسی حلقے سے ہے اور گزشتہ دنوں انہوں نے خود کالج کادورہ بھی کیا اور پچاس لاکھ کے سولر سسٹم لگانے کا بھی اعلان کیا اور طلباء سے ملاقات بھی کی طلباء واساتذہ نے ان کے سامنے اپنے مسائل بھی رکھے لیکن مایوسی کے سوا انہیں کچھ بھی نہیں ملا.

ایم پی اے فتح بلیدی جوکہ مرحوم ایوب بلیدی کے فرزند ہیں اسی حلقے کا ایم پی اے ہیں انہیں چاہیے کہ وہ بھی ان مسائل پر توجـہ دیں.
کالج کے اہم مسائل میں چار دیواری بھی ہے، چاردیواری نہ ہونے کیوجہ سے کالج غیرمحفوظ ہے کوئی بھی تعلیم دشمن وہاں اگر مزموم مقاصد حاصل کرنے کی کوشش کرے تو بآسانی وہ کامیاب ہوسکتاہے. بلیدہ کالج کیلئے پروفیسر ظہیــر احمد کی کاوشیں قابل تحسین ہیں مگر علاقہ کی موجودہ اور سابقہ نمائندگان کی عدم دلچسپی سے کالج مختلف مسائل کاشکارہے. طلباء نے کہاکہ اعلی حکام کوچاہیے کہ وہ کالج کے مسائل پر توجہ دیں اور مسائل کو حل کرنے کی کوشش کریں بصورت دیگر وہ بھی اساتذہ کیساتھ ملکر احتجاج کرنے پر مجبور ہونگے.

Facebook Comments
(Visited 71 times, 1 visits today)

متعلق یلان زامرانی

یلان زامرانی
کیچ کے رہائشی یلان زامرانی قلمی نام سے لکھتے ہیں۔ "رُژن" کے نام سے ایک ماہنامہ بھی چھاپتے ہیں۔ بلوچستان کے سیاسی، سماجی مسائل ان کی دلچسپی کا خاص موضوع ہیں۔