مرکزی صفحہ / اسپیشل ایڈیشن / عبداللہ جان جمالدینی / عبداللہ جان کی پہلی برسی پر کتاب کی اشاعت

عبداللہ جان کی پہلی برسی پر کتاب کی اشاعت

حال حوال

بلوچستان کے معروف ادیب، دانش ور و مفکر پروفیسر عبداللہ جان جمالدینی کی پہلی برسی کے موقع پر اُن کی حیات و شخصیت سے متعلق ایک کتاب شائع کی گئی ہے.

بلوچی میں شائع شدہ اس کتاب کی ترتیب و تدوین کا کام یار جان بادینی نے سرانجام دیا ہے.

اُن کے مطابق کتاب کے چار حصے ہیں. پہلے حصے میں عبداللہ جان نے اپنی خودنوشت "زندگی نامہ” کے عنوان سے جو اُن کے بلوچی ماہتاک میں لکھی، اس کی چار اقساط شامل ہیں.

دوسرے حصے میں گزشتہ برس عبداللہ جان کی وفات کے موقع پر ادارہ کی جانب سے منعقدہ تعزیتی ریفرنس میں جو مضامین پڑھے گئے تھے، انہیں جمع کیا گیا ہے.

تیسرا حصہ عبداللہ جان کے انٹرویوز پر مبنی ہے جو ان کی زندگی میں مختلف اوتات میں ان سے لیے گئے. ان میں ایک طویل انٹرویو عزیز بگٹی نے اُن سے لیا. ایک انٹرویو اکبر بارکزئی نے لیا جو "لبزانک” میں شائع ہوا. اسی طرح ایک انٹرویو صبا دشتیاری کی جانب سے لیا گیا، جب کہ مرتب کی جانب سے لیا گیا ایک انٹرویو بھی شامل ہے.

چوتھے حصے میں ادارہ کی جانب سے منعقدہ تعزیتی ریفرنس کا مفصل احوال درج کیا گیا ہے.

کتاب کی ضخامت 200 صفحات کے لگ بھگ ہے. اسے زند اکیڈمی نوشکی کے زیراہتمام شائع کیا گیا ہے. بیک ٹائٹل پہ عبداللہ جان کا مختصر زندگی نامہ درج ہے.

یار جان بادینی کا کہنا ہے کہ وہ بہت جلد نوشکی میں ہی اس کتاب کی تقریب کا اہتمام کریں گے جس میں بلوچی کے نام ور ادیب شریک ہوں گے.

Facebook Comments
(Visited 37 times, 1 visits today)

متعلق حال حوال

حال حوال
"حال حوال" بلوچستان سے متعلق خبروں، تبصروں اور تجزیوں پہ مبنی اولین آن لائن اردو جریدہ ہے۔